. . غزل حُضُور بس اَپنے تلک ہی رَکھیے گا وُہ رُوٹھ جائے گا مجھ سے جو اُس کی دُھوم مچی . . .


.
.
غزل حُضُور بس اَپنے تلک ہی رَکھیے گا
وُہ رُوٹھ جائے گا مجھ سے جو اُس کی دُھوم مچی
.
.
.


Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *