پلاتا ہے حق جس کو جامِ محمدؐ

پلاتا ہے حق جس کو جامِ محمدؐ
وُہ اَشکوں سے لکھتا ہے نامِ محمدؐ

خِرد ، عشق ، تعلیم ، تقویٰ ہے لازِم
سبھی کیسے سمجھیں مقامِ محمدؐ

دُرُود اُن پہ جب جب پڑھیں بھیگی آنکھیں
اُترتا ہے دِل پر سلامِ محمدؐ

عبادَت کی معراج ، سبحانَ رَبی
خدا نے کیا کم قیامِ محمدؐ

کلامِ محمدؐ ، بحکمِ خدا ہے
کلامِ خدا ہے کلامِ محمدؐ

مجھے کاش محشر میں سہواً ہی سمجھیں
غلامِ غلامِ غلامِ محمدؐ

خدا حشر میں اُس پہ رَحمت کرے گا
ہے جس دِل میں قیسؔ اِحترامِ محمدؐ
#شہزادقیس
.