Page No. 1

Page No. 1

بند کمروں کی سیاست پہ خدا کی لعنت
قوم سے مخفی خیانت پہ خدا کی لعنت
اَجنبی ہاتھ جسے رَقص پہ اُکساتے ہوں
ایسی کٹھ پتلی قیادَت پہ خدا کی لعنت
آنکھ کے اَندھوں کی اُنگلی تو پکڑ سکتے ہیں
عقل کی اَندھی جماعت پہ خدا کی لعنت
عدل کی مسخ شدہ لاش سے آواز آئی
ظلم کے یومِ وِلادَت پہ خدا کی لعنت
ظلم کا بڑھتے چلے جانا ہے اَصلی توہین
اَصل توہینِ عدالت پہ خدا کی لعنت
نسل دَر نسل اُسی آہنی ٹوپی کی گھُٹن
سلسلہ وار جہالت پہ خدا کی لعنت
لُوٹ کر پکڑے نہ جانا ہو مہارَت جس کی
اُس خداداد ذَہانت پہ خدا کی لعنت
اِنقلاب عقل بھی اِک عمر میں لا پاتی ہے
بے وَقوفوں کی بغاوَت پہ خدا کی لعنت
بھونکنے والوں کے ڈَر سے جو نہ نکلے گھر سے
شیر کی اُس سے شباہت پہ خدا کی لعنت
چھوڑ کر ذِہنی قبیلوں کا دِفاع مل کے کہو
ہر ستم گار جماعت پہ خدا کی لعنت
گھر یتیموں کے جو دو روٹیاں پہنچا نہ سکے
قیس اُس لنگڑی رِیاست پہ خدا کی لعنت
(Built By UrduKit UrduKit.com)
Not yet rated

No Comments

Add a comment:

Code
*Required fields