Page No. 1

Page No. 1

غُرور بیچیں گے ، نہ اِلتجا خریدیں گے
نہ سر جھکائیں گے ، نہ سر جھکا خریدیں گے
قَبول کر لی ہے ، دیوارِ چین آنکھوں نے
اَب اَندھے لوگ ہی ، رَستہ نیا خریدیں گے
جھُکیں تو اُس کو ’’سخاوت‘‘ لگے یہ جھُکنا بھی!
اَب اَپنے قَد کا ’’کوئی‘‘ دیوتا خریدیں گے
یہ ضِدّی لوگ ہیں اِن سے وَفا کی رَکھ اُمید
جفا گُزیدہ ، مُکرّر جفا خریدیں گے
پھر اُس ’’ہُجوم‘‘ کا ، قبلہ دُرست ہو کیسے
جو قبلہ بیچ کے ، قبلہ نُما خریدیں گے
خریدتے رہے ہم ’’سادہ پانی‘‘ گر یونہی
وُہ دِن بھی آئے گا ، ہم سب ہَوا خریدیں گے
قسم اُصول کی کھائی ہے زِندگی کی نہیں
بقا کو جھکنا پڑا تو فنا خریدیں گے
ہمارے بازُو بھی گرتے ہیں ساتھ پرچم کے
تمہارے جیسے بھلا ہم کو کیا خریدیں گے
عُدُو نے گھیرا تو کر کے نیام کے ٹکڑے
بزورِ بازُو نیا راستہ خریدیں گے
جُنون ، جنگ میں کھائے شکست ، ناممکن
قبیلہ ہار گیا تو قضا خریدیں گے
عُدُو کے سُورما ، چومیں گے پاؤں لاش کے قیس
ہم اَپنی جنگ سے وُہ مرتبہ خریدیں گے
(Built By UrduKit UrduKit.com)
Not yet rated

No Comments

Add a comment:

Code
*Required fields