رِہ رِہ کے قفس بنتا ہے نمناک دُھوئیں سے

رِہ رِہ کے قفس بنتا ہے نمناک دُھوئیں سے

رِہ رِہ کے قفس بنتا ہے نمناک دُھوئیں سے
شاید میں پرندے کی چِتا دیکھ رَہا ہُوں
شہزاد قیس کی کتاب "اِنقلاب" سے انتخاب
Built By UrduKit (www.UrduKit.com)
Not yet rated

No Comments

Add a comment:

Code
*Required fields