ہر ایک شخص کا ، سمجھوتہ اَپنے حال سے ہے

ہر ایک شخص کا ، سمجھوتہ اَپنے حال سے ہے

ہر ایک شخص کا ، سمجھوتہ اَپنے حال سے ہے
خوشی سے سانس اُکھڑنا تھا ، غم جو راس ہُوئے
شہزاد قیس کی کتاب "اِنقلاب" سے انتخاب
Built By UrduKit (www.UrduKit.com)
Not yet rated

No Comments

Add a comment:

Code
*Required fields