آسماں تکتے ہیں کچھ دیر کو نم آنکھوں سے

آسماں تکتے ہیں کچھ دیر کو نم آنکھوں سے

آسماں تکتے ہیں کچھ دیر کو نم آنکھوں سے
اور پھر رِزق کماتے ہُوئے مر جاتے ہیں
شہزاد قیس کی کتاب "اِنقلاب" سے انتخاب
Built By UrduKit (www.UrduKit.com)
Not yet rated

No Comments

Add a comment:

Code
*Required fields